April 10, 2017
فاطمہ جناح ڈینٹل کالج، سالانہ کانووکیشن

فاطمہ جناح ڈینٹل کالج، سالانہ کانووکیشن

پی اے ایف میوزیم، کراچی کے کنونشن سینٹر میں گزشتہ دنوں فاطمہ جناح ڈینٹل کالج کا 20 واں سالانہ جلسہ تقسیم اسناد منعقد ہوا۔ ہال جہاں روشنیوں سے جگمگارہاتھا وہیں طلبہ کے چہرے بھی خوشی سے دمک رہے تھے۔ تقریب کے مہمان خصوصی ایڈووکیٹ سپریم کورٹ اور جناح فائونڈیشن کے چیئرمین لیاقت مرچنٹ تھے۔ تقریب کے دیگر اہم مہمانوں میں کراچی یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر محمد اجمل خان، فاطمہ جناح ڈینٹل کالج کی پرنسپل پروفیسر ڈاکٹر تسلیم حسین، فاطمہ جناح ڈینٹل کالج کے سربراہ اور چیف ایگزیکٹو ڈاکٹر سید باقر عسکری، ڈین فیکلٹی آف میڈیسن ڈاکٹر نرگس انجم اور ڈائریکٹر آف اکیڈمکس اور ٹرسٹی ڈاکٹر حسین عسکری شامل تھے۔
ہال کے درمیان میں موجود اسٹیج پر مہمانانِ خصوصی موجود تھے، جبکہ دائیں جانب کالج کے فیکلٹی ممبران اور بائیں جانب بی ایس گریجویٹس کے وہ طلبہ موجود تھے، جنہیں ڈگریاں تفویض کی گئیں۔ نیلی روشنیوں کی جگمگاہٹ میں وائس چانسلر ڈاکٹر اجمل خان نے بی ڈی ایس کرنے والے 77 طلبہ میں ڈگریاں تقسیم کیں۔ اس موقع پر بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے 18طلبہ میں گولڈ میڈلز اور بی ڈی ایس کے چار سالوں کے دوران پہلی، دوسری اور تیسری پوزیشن حاصل کرنے والے 12 طلبہ و طالبات کو شیلڈز بھی دی گئیں۔ مجموعی طور پر چار سال کے دوران کالج کے امتحانات میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کرنے اور پہلی پوزیشن حاصل کرنے والی طالبہ مشعل طلعت کو 75ہزار روپے، دوسری پوزیشن حاصل کرنے والی طالبہ تحریم لیاقت کو 50ہزار روپے اور تیسری پوزیشن حاصل کرنے والی طالبہ رابعہ اشرف کو25ہزار روپے کا کیش ایوارڈ بھی دیاگیا۔
کالج کی جانب سے ’’بیسٹ گریجویٹ‘‘ کا اعزاز ’’مشعل طلعت‘‘ کے نام رہا۔ اس طالبہ نے اعلیٰ کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 6گولڈ میڈلز اور کالج کے بی ڈی ایس فائنل ایئر امتحانات میں پہلی پوزیشن اپنے نام کی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے مہمان خصوصی لیاقت مرچنٹ کا کہنا تھا کہ ہمارے معاشرے کو پڑھے لکھے نوجوانوں کی بہت ضرورت ہے، کیونکہ جب یہ ڈاکٹرز آگے آئیں گے اور لوگوں کی خدمت کریں گے توانہیں دیکھ کردوسرے لوگوں میں بھی ملکی خدمت کا جذبہ بڑھے گا۔ کراچی یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر اجمل خان نے اپنے خطاب میں کہا کہ کراچی یونیورسٹی اپنا میڈیکل کالج قائم کرنے کیلئے کوشاں ہے اور اس کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ جامعہ، نجی شعبہ تعلیم کے فروغ میں اہم کردار ادا کررہی ہے، فاطمہ جناح ڈینٹل کالج شعبۂ طب میں قومی فریضہ انجام دے رہاہے، دیگر کالجز کو بھی ان کے نقش قدم پر چلنا چاہئے۔ وائس چانسلر نے گریجویٹس طلبہ اور ان کے والدین کو مبارکباد پیش کی اور یہ پیغام دیا کہ ’’دنیا میں وہی قومیں کامیاب ہوتی ہیں اور ترقی کرتی ہیں، جو تعلیم یافتہ ہوتی ہیں۔‘‘
اس تقریب کیلئے جو بینر اسٹیج پر لگایا گیا تھا اس میں کالج کے 25سال مکمل ہونے کا ’لوگو‘ بھی موجود تھا،جس سے بخوبی پتا چلتا ہے کہ فاطمہ جناح ڈینٹل کالج اس سال اپنی سلور جوبلی منا رہا ہے۔ کالج کے قیام یعنی1992ء سے لے کر اب تک یہاں سے بی ڈی ایس کے ایک ہزار3سو34طلبہ فارغ اتحصیل ہوچکے ہیں۔ کراچی یونیورسٹی کی جانب سے لئے جانے والے سالانہ امتحانات میں کالج کے طلبہ نے اب تک بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کیاہے۔ بی ڈی ایس فائنل پروفیشن کے امتحانات (1996ء سے لے کر2016ء تک) میں اب تک کالج کی جانب سے 20بیجز حصہ لے چکے ہیں۔ ان امتحانات میں ایک ہزار4سو75طلبہ نے حصہ لیا، ان میں سے ایک ہزار3سو34طلبہ کامیاب قرار پائے، یوں ان کی کامیابی کا تناسب مجموعی طور پر 90؍اعشاریہ 44فیصد رہا۔ فاطمہ جناح ڈینٹل کالج سے تعلق رکھنے والے طلبہ نے اب تک کراچی یونیورسٹی کے امتحانات میں بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کر کے 275گولڈ میڈلز اپنے نام کئے ہیں۔