November 26, 2018
بال میرے جان میری

بال میرے جان میری

خواتین اپنے چہرے کے بعد، بالوں کی خوبصورتی اور صحت کے لیے سب سے زیادہ پریشان رہتی ہیں۔ طرح طرح کے ٹوٹکے استعمال کیے جاتے ہیں، ترکیبیں آزمائی جاتی ہیں لیکن سچ تو یہ ہے کہ ہر ترکیب، ہر خاتون کے لیے کارآمد نہیں ہوسکتی۔ ایک خاتون کے بال اگر کھوپرے کے تیل سے صحت مند ہوئے ہیں تو ضروری نہیں کہ آپ کیلئے بھی کھوپرے کا تیل اچھا ثابت ہو۔ اس لیے ہمارا مشورہ ہے کہ بالوں کو صحت مند بنانے کی کوشش ضرور کیجئے مگر ساتھ ہی اپنے بالوں کی منفرد خصوصیات بھی جان لیجئے تاکہ درست ترکیب اور بہترین ہیئر کیئر مصنوعات کا استعمال ممکن ہوسکے۔
بال ڈائی کرنا اچھا نہیں: بالوں کے حوالے سے سب سے عام شکایت یہ ہے کہ بال سفید ہورہے ہیں، نوعمر بچوں کے بال بھی اس مسئلے سے دور نہیں، پندرہ، اٹھارہ سال کے بچے بھی سفید بال لیے گھومتے ہیں، لیکن اس مسئلہ کا حل کیا ڈائی کرنا ہے؟ ماہر ہیئر ایکسپرٹس کی رائے ہے کہ اگر نوجوانی میں ہی بال سفید ہونے لگیں تو اس سے بچنے کے لیے بالوں کو ڈائی نہ کیجئے، ڈائی کا استعمال بال سفید ہونے کا عمل مزید تیز کردے گا اور جلد ہی یہ حال ہوجائے گا کہ ہر بیس دن بعد ہیئر ڈائی استعمال کرنے کی ضرورت محسوس ہوگی۔ اب آپ سوچ رہی ہوں گی کہ اس کے علاوہ مسئلہ کا حل کیا ہے۔ بیوٹی ایکسپرٹس کا مشورہ ہے کہ جو بال سفید ہوئے ہیں، ان کو ہائی لائٹ کرلیجئے۔ اس طرح بال زیادہ خوبصورت اور قدرتی نظر آئیں گے۔ اس کے علاوہ معیاری حنا بھی استعمال کی جاسکتی ہے۔
ہائی لائٹس:اگر آپ کے بال پتلے اور باریک ہیں تو جسمانی صحت پر توجہ دیجئے، لیکن اس مسئلہ کا ایک آسان حل یہ بھی ہے کہ بالوں میں آرٹیفیشل ہائی لائٹس کا اضافہ کرلیا جائے۔ سر کے سامنے والے حصے میں زیادہ رنگین ہائی لائٹس استعمال کرنا بہتر ہے۔ ہائی لائٹس کا رنگ جڑوں کی جانب گہرا اور سرے کی جانب ہلکا ہونا چاہیے۔
دو منہ کے بال، اب نہیں:کیا آپ بال جوڑے کی شکل میں باندھے رکھنا پسند کرتی ہیں؟ ہمارا مشورہ ہے کہ اس عادت کو کچھ بدلنے کی کوشش کیجئے۔بالوں کو مسلسل سختی سے لپیٹ کر رکھنا دو منہ کے بال ہونے کی وجہ بن سکتا ہے۔
بلو ڈرائی کرنے کا صحیح طریقہ:کیا آپ کو بھی بلو ڈرائی کیے ہوئے بال اچھے لگتے ہیں؟ اس کا بہترین طریقہ یہ ہے کہ پہلے بالوں کی جڑوں کو اپنی انگلیوں کی مدد سے اٹھا کر بلو ڈرائی کیا جائے، اس طرح بال زیادہ گھنے اور بھرپور نظر آتے ہیں، اگر پہلے سرے یا اوپر کے بالوں کو بلو ڈرائی کردیا جائے تو بال چپکے ہوئے نظر آنے لگتے ہیں۔
شیمپو :شیمپو براہ راست لگانے کے بجائے اس میں تھوڑا پانی ملا لیجئے اور پھر بالوں کو چار حصوں میں تقسیم کر کے پہلے پچھلی جانب اور پھر سامنے کی جانب کے بال پر شیمپو لگائیے، بالوں کی لمبائی پر شیمپو خود سے لگانے کے بجائے بہتر یہ ہوگا کہ شیمپو بہتا ہوا سِرے تک پہنچ جائے، اس طرح بال زیادہ صاف اور چمکدار نظر آنے لگیں گے۔
کنڈیشنر کرنے سے پہلے:ایک ایسی کنگھی خرید لیجئے جس کے نوکیلے دانت چوڑے اور پھیلے ہوئے ہیں، شیمپو کے بعد کنڈیشنر لگائیے اور گیلے بالوں کو اس چوڑی کنگھی کی مدد سے سلجھالیجئے، گیلے اور کنڈیشنر کیے ہوئے بالوں میں کنگھی کرنا آسان ہوگا اور بال سوکھنے کے بعد کھردرے یا الجھے ہوئے نہ رہیں گے۔
تیل لازم ہے:بالوں کی اچھی نشو ونما کے لیے تیل ضروری ہے، دوگھنٹے کے لیے ہی سہی لیکن تیل لازمی لگائیے۔