December 03, 2018
خود گھر میں بنایا ہے تم نے؟

خود گھر میں بنایا ہے تم نے؟

آج کی دنیا بڑی ہی تیز رفتار ہے۔ ضرورت زندگی کی ہر چیز بازار میں دستیاب ہے۔ گھر میں کھانا نہیں بنایا جاتا تو فرنیچر، سجاوٹی سامان اور ضرورت کی دیگر اشیاء تیار کرنے یا کچن گارڈن پر توجہ دینے کا وقت کس کے پاس ہوگا؟ لیکن کیا ہم ٹیکنالوجی اور جدت کے پیچھے پیچھے بھاگتے بھاگتے بے ہنر نہیں ہوتے جارہے؟ پہلے خواتین لحاف اور پردوں کے علاوہ عام اور قیمتی ملبوسات تک ہر چیز گھر میں سلائی کڑھائی کے ذریعے تیار کرتی تھیں۔ گھر کے مرد فرنیچر کی مرمت با آسانی کر لیا کرتے تھے۔ سجاوٹی سامان خود ہی تیار کیا جاتا تھا۔ دستکاری کا چرچا تھا۔ ہنر اور رواج کا بول بالا تھا، لیکن آج وقت بدل گیا ہے۔ نہ وقت ہے اور نہ فرصت، تیار شدہ چیزیں آسان اور سہل بنتی جارہی ہیں اور ہم اس آسانی میں اپنے ہاتھ سے کام کرنے کا مزہ اور ہنر کھو رہے ہیں۔ سچ تو یہ ہے کہ اپنے ہاتھ سے کام کرنے میں جو سکون اور آرام ہے، وہ کسی اور کی تیار کی ہوئی چیز خرید کر حاصل نہیں کیا جاسکتا۔ آپ اپنی اور اپنے گھر کی ضرورت سے بخوبی واقف ہیں، اس لیے جو کام آپ کر سکتی ہیں یقیناً وہ کوئی اور انجام نہیں دے سکتا، اس اصول پر توجہ دیجئے، اور سوچئے جب کوئی چیز آپ اپنے ہاتھ سے بنا سکتی ہیں تو اس کو مہنگے داموں باہر سے کیوں خریدا جائے؟
ہم یہ نہیں کہہ رہے کہ آپ گھر کی تعمیرو مرمت خود کرنے لگیں، مقصد صرف چند کام جو کہ با آسانی کیے جاسکتے ہیں، ان کی طرف توجہ مبذول کروانا ہے۔ سہیلیو! اپنے ہاتھ سے کام کرنے کا ہنر بھولنے سے پہلے، یہ چند چیزیں خود بنانے کی کوشش کیجئے۔ آپ کو معلوم ہوگا کہ وہ چیزیں جو آپ مہنگے داموں باہر سے خرید رہی ہیں، وہ دراصل بے حد آسانی سے گھر میں تیار کی جاسکتی ہیں اور گھر میں یہ کام کرنے سے آپ کی بچت بھی ہوگی اور اس کا بہترین پسندیدہ معیار بھی حاصل ہوسکے گا۔ آج ہم آپ کو چند ایسی چیزیں بتا رہے ہیں، جن کو گھر میں تیار کرنا، خریدنے سے بہتر ہوگا۔
کلینرز:اپنے گھر میں کیمیائی اجزاء سے تیار کیے جانے والے ہوم کلینرز کی آمد پر مکمل پابندی عائد کردیجئے اور گھر میں موجود مختلف چیزیں صاف کرنے کے لیے کلینر گھر میں ہی تیار کیجئے۔ یہ ممکن ہے، آپ کو بس بیکنگ سوڈا، سرکہ (Vinegar) اور پانی کی ضرورت ہوگی۔ جب صفائی کے لیے یہ قدرتی اجزاء استعمال کیے جائیں گے تو نہ صرف ماحول محفوظ رہے گا بلکہ کیمیائی اجزاء پر مشتمل مضر صحت کلینرز سے بھی جان بچ جائے گی۔
کلینر تیار کرنے کیلئے آپ کو مندرجہ ذیل چیزوں کی ضرورت ہے۔ سرکہ، بیکنگ سوڈا، لیموں، ایسینشیل آئل (Essential Oil)، پانی اور برتن دھونے والا صابن۔ ایک اسپرے بوتل میں سب سے پہلے ایک چائے کا چمچ بیکنگ سوڈا ڈالئے، آدھا چمچ، برتن دھونے کا صابن، دو کھانے کا چمچ سرکہ ڈالئے اور اچھی طرح ہلا کر ملا لیجئے۔ اب بوتل کو گرم پانی سے بھر دیجئے اور کچھ دیر بعد چند قطرے ایسینشیل آئل ڈال کر ملائیے۔ اس مرکب کی مدد سے آپ گھر اور باورچی خانے کی ہر چیز صاف کر سکتی ہیں۔ سنک اور چولہا صاف کرنے کے لیے ایک چوتھائی پیالی بیکنگ سوڈا کو گرم پانی کے ساتھ ملائیے اور پیسٹ بنا کر اسفنج کی مدد سے صاف کرلیجئے۔ یہ مرکب یا کلینر ضرورت کے مطابق تازہ تیار کیا جاسکتا ہے۔
پردے خود تیار کیجئے:پردے سینا، ڈیزائن کرنا زیادہ مشکل کام نہیں، بس ضرورت ہے تو اس بات کی کہ آپ اس کام کو کرنے کا ارادہ کرلیں۔ اگر سیدھی سلائی کرنا آتی ہے تو سمجھ لیجئے، آپ پردے آسانی سے تیار کر سکتی ہیں۔ اب سوال یہ ہے کہ پردے گھر میں خود سے تیار کرنے کا مقصد کیا ہے؟ مقصد بہت سادہ ہے، بازار میں پردے کا کپڑا اتنا مہنگا نہیں، جتنی کہ اس کی سلائی ہے، جبکہ یہی کام گھر میں فارغ وقت کے دوران آسانی سے کیا جاسکتا ہے۔ آجکل یوں بھی پردے سینے کے کئی آسان طریقے ایجاد کیے جاچکے ہیں، ان میں تکنیک اور سادگی کا امتزاج جھلکتا ہے اور کام بھی مشکل نہیں ہوتا۔ ایک اہم بات یاد رہے کہ اگر آپ سلائی کرنا نہیں جانتیں یا یہ کام کرنے میں دلچسپی نہیں تو یہ کام نہ کیجئے، ورنہ پردے بنانے کے لیے خریدا گیا مہنگا اور قیمتی کپڑا خراب ہوسکتا ہے یا پردے سلنے کے بعد غیر معیاری نظر آسکتے ہیں۔
پردے گھر میں تیار کرنے کے لیے:سب سے پہلے تو آپ پردے بنانے کے لیے کپڑا منتخب کر لیجئے، آپ ان کو آسان ترکیب استعمال کر کے گھر میں رنگ بھی سکتی ہیں اور ان پر کڑھائی بھی بنا سکتی ہیں، اکثر خواتین سادہ کپڑے پر پرنٹنگ کروانا پسند کرتی ہیں، یہ کام بھی گھر میں ممکن ہے۔ اس کے علاوہ پردوں پر گرافک لُک یا فلورل پرنٹس بھی بنائے جاسکتے ہیں، اگر آپ نے پردے تیار کرنے کے لیے ایسا کپڑا منتخب کیا ہے جو پہلے سے ہی پرنٹ اور کڑھائی وغیرہ سے سجا ہے تو سمجھئے آپ کا کام مزید آسان ہوجائے گا۔ دو رنگی پردے تیار کرنے کے لیے بہتر ہے کہ پہلے گھر کے کھڑکی، دروازوں کا ناپ لے لیا جائے تاکہ ان کے مطابق مختلف کپڑے کو کاٹنا اور سینا ممکن ہو۔ اب یوں تو آپ پردے خود سے گھر میں سی رہی ہیں لیکن پردے لگانے کے لیے سستی اور غیر معیاری فٹنگ، آپ کے گھر کا انداز متاثر کرنے کا سبب بن سکتا ہے، اس لیے ہمیشہ بہترین معیار کی روڈز اور کلپس کا انتخاب کیجئے۔
کشن:چاہے وہ صوفہ کے ساتھ استعمال کیے جائیں، یا پلنگ پر رکھنے کے لیے استعمال ہوں، فرش اور قالین کے لیے بنائے جائیں یا صرف سجاوٹ کے لیے کرسی پر رکھے ہوں، ہر قسم کے کشن آپ گھر میں با آسانی تیار کر سکتی ہیں تو پھر بتائیے، آپ کو بازار سے ان کو خریدنے کی ضرورت کیا ہے؟ جب زیادہ مہمان گھر پر آتے ہیں اور صوفہ، کرسی پر جگہ باقی نہیں بچتی، تب ان کی اہمیت واضح ہوتی ہے، اس کے علاوہ یہ آپ کے کمرے کو رنگین بنانے کے لیے بھی ایک بہترین ہوم ایکسرسیری ہے۔ معروف برانڈز کے اسٹورز کا دورہ کیجئے، آپ کو ہر دکان میں یہ نظر آئیں گے، لیکن یقین جانئے، بہترین کشن آپ اپنے گھر میں تیار کرسکتی ہیں۔
کشن تیار کرنے کیلئے :کسی پرنٹڈ کپڑے کی مدد سے دو 18انچ کے دائرے کاٹ لیجئے۔ اب اسی کپڑے یا دوسرے پرنٹ والے کپڑے کی مدد سے دو لمبی اور چوڑی پٹیاں بنائیے اور ان کو سلائی مشین سے کشن کی شکل میں سی لیجئے۔ اب کشن کے کور میں اپنی پسند کا میٹریل بھر لیجئے، روئی، اون، فوم یا پولی فل بھی استعمال کیا جاسکتا ہے۔