December 03, 2018
ڈاکٹرز کے زیراستعمال سپلی منٹس - قسط : 02

ڈاکٹرز کے زیراستعمال سپلی منٹس - قسط : 02

’’دانتوں کی مضبوطی کیلئے کیلشیم کی گولیاں لیتا ہوں‘‘

عام طور پر ڈاکٹرز تمام غذایتوں کے حصول کیلئے متوازن غذا کھانے کا مشورہ دیتے ہیں تاہم بہت سے افراد اپنی خوراک میں وہ تمام غذائی اجزا کئی وجوہ سے شامل نہیں کرسکتے اور غذائی سپلی منٹس سے یہ کمی پوری کی جاتی ہے۔ گزشتہ شمارے میں کچھ ایسی سپلی منٹس کا ذکر کیا گیا تھا جو برطانوی ڈاکٹرز استعمال کرتے ہیں۔ اس سلسلے میں کچھ اور ڈاکٹرز اپنی پسندیدہ سپلی منٹس کے بارے میں بتارہے ہیں۔
ڈاکٹر میلاد شادروح 37سال کے ہیں اور بیسنگ اسٹوک، ہیمپشائر میں ڈینٹسٹ ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ ’’میں ایک مختلف قسم کا سپلی منٹ روزانہ لیتا ہوں تاکہ میری عمومی صحت، خاص طور پر دانت صحت مند رہیں۔ اس میں کیلشیم شامل ہوتا ہے۔ ایک بالغ شخص کیلئے کیلشیم کی سفارش کردہ یومیہ مقدار 700ملی گرام ہے جو 200ملی لیٹر والے کپ میں تین بار دودھ پینے سے حاصل ہوسکتا ہے۔ میں سپلی منٹ اس لیے لیتا ہوں کہ مجھ سمیت بہت سے افراد روزانہ اپنی خوراک کے ذریعے مطلوبہ مقدار میں کیلشیم حاصل کرنے سے قاصر رہتے ہیں۔ دانت کے اوپر جو حفاظتی تہہ ہوتی ہے، اسے Enamel کہتے ہیں اور یہ تہہ کیلشیم سے بنی ہوتی ہے، اس لئے یہ معدن دانتوں کو خراب ہونے سے بچانے میں اہم کردار ادا کرتا ہے۔ میں آئرن سپلی منٹ بھی لیتا ہوں کیونکہ اس کی کمی سے منہ میں چھالے بن سکتے ہیں۔ یہ خون کی کمی یا Anaemia کی بھی علامت ہوتی ہے جس میں خون میں سرخ خلیات کی بہت کمی واقع ہو جاتی ہے۔
مضبوط ناخن کیلئے زنک
49سالہ جوانا گاش، یونیورسٹی ہاسپٹلز کووینٹری اینڈ واروک شائر، این ایچ ایس ٹرسٹ میں کنسلٹنٹ ڈرماٹولوجسٹ ہیں۔ وہ کہتی ہیں ’’میں اکثر و بیشتر ایک ملٹی وٹامن کیپسول استعمال کرتی ہوں جس میں زنک، سیلنیم اور بایوٹن ہوتے ہیں۔ یہ تمام چیزیں میرے کھردرے ناخنوں کو ٹھیک رکھتی ہیں اور ان کی وجہ سے میرے بال بھی صحتمند رہتے ہیں۔ آپ صرف ایک دو دن سپلی منٹ لے کر اس کے فوائد حاصل نہیں کرسکتے۔ ایک وقت میں کئی ہفتے تک اس کے کورس مکمل کرنے سے آپ اپنی صحت میں فرق دیکھ سکیں گے، اس لئے میں ایک وقت میں دو ماہ کیلئے یومیہ سپلی منٹ لے سکتی ہوں اور یہ بھی ہوسکتا ہے کہ جب تک فائدہ نہ دیکھ لوں، اسے استعمال کرتی رہتی ہوں۔ 2013ء کے ایک جائزے میں جو ’’اینلز آف ڈرماٹولوجی‘‘ میں شائع ہوا تھا اور اس میں 312گنجے افراد پر تحقیق کی گئی تھی، یہ دیکھا گیا کہ ان کے بال اس لئے جھڑ گئے تھے کیونکہ ان کے خون میں زنک کی سطح بہت کم تھی۔
نظر کی بہتری کیلئے اینٹی آکسیڈنٹس
62سالہ ڈاکٹر روب ہوگن، آئی کیئر کنسلٹنگ میں اوپٹو میٹرسٹ (Optometrist) ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ ’’جو شخص نظر کی پیمائش کا کام کرتا ہو، اگر خود اس کی نظر کمزور ہو تو وہ دوسروں کو کس طرح فائدہ پہنچا سکتا ہے؟ لیکن چونکہ میں خود بوڑھا ہو رہا ہوں اور جن مریضوں کو میں دیکھتا ہوں، ان کی وجہ سے میں عمر سے متعلق آنکھوں کی ایک خرابی Age Related Macular Degeneration سے بہت اچھی طرح آگاہ ہوں، جو 60سال سے زیادہ عمر کے افراد میں بصارت سے محرومی کا ایک اہم سبب ہوتی ہے۔ یہ خرابی اس وقت پیدا ہوتی ہے جب آنکھ کے پیچھے پردۂ چشم (Macula) کے چھوٹے سے وسطی حصے میں بگاڑ شروع ہوتا ہے۔ لہٰذا اس سے بچنے کیلئے میں MacuShield لیتا ہوں۔ یہ ایک سپلی منٹ ہے جس کے بارے میں جائزے سے معلوم ہوا ہے کہ اس کے استعمال سے نظر بہتر ہوتی ہے اور آنکھ کا عقبی حصہ صحت مند رہتا ہے۔ یہ سپلی منٹ قدرتی مرکبات مثلاً لوٹین، زی ایگزانتھین اور میسوزی ایگزانتھین پر مشتمل ہے جو ایسے اینٹی آکسیڈنٹس ہیں جن سے بصارت بہتر ہوتی ہے اور آنکھیں صحت مند رہتی ہیں۔ میں روزانہ ایک سپلی منٹ عموماً کھانے کے ساتھ لیتا ہوں۔
منہ کے چھالے کیلئے وٹامن B
47سالہ لیوک کیسکا رینی لندن کے گائیز اینڈ سینٹ تھامس ہاسپٹل میں کنسلٹنٹ میگزیلو فیشیل سرجن ہیں۔ وہ کہتے ہیں ’’روزانہ بنیادوں پر لوگوں کے منہ کے اندر جھانکنے سے مجھے یہ بات اچھی طرح معلوم ہوگئی ہے کہ منہ کو صحت مند رکھنے کیلئے کیا چیز ضروری ہے۔ میں روزانہ ایک وٹامن مشروب پیتا ہوں جس میں وٹامن B کمپلیکس کی وافر مقدار ہوتی ہے اور یہ منہ کی صحت کیلئے اچھی چیز ہے۔ خاص طور پر جسم میں اگر وٹامن B12 کی سطح گرجائے تو منہ میں چھالے نمودار ہوسکتے ہیں اور زبان سوج سکتی ہے۔ یہ اس وجہ سے ہوتا ہے کہ منہ کی اندرونی دیوار کے ساتھ جو جھلی (Mucosa) ہوتی ہے، اسے صحت مند رکھنے کیلئے اس وٹامن کی ضرورت ہوتی ہے۔ چونکہ B وٹامنز پانی میں حل پذیر ہوتے ہیں، اس لئے خالی پیٹ یہ بہت اچھی طرح جذب ہوجاتے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ میں ناشتے سے پہلے یہ مشروب پی لیتا ہوں جس کی وجہ سے میرے منہ میں چھالے کبھی نہیں بنتے۔(جاری ہے)