December 03, 2018
بلڈ پریشر کم کرنے کے لیے ’’حبس کس‘‘ کی چائے

بلڈ پریشر کم کرنے کے لیے ’’حبس کس‘‘ کی چائے

سرخ رنگ کا یہ پھول ہمارے گھروں اور لانوں میں اکثر دیکھا جاتا ہے۔ جنس خبازی یا جنس پٹوا سے تعلق رکھنے والے اس پھول کو انگریزی میں Hibiscus کہتے ہیں۔ اس پھول کی خشک پتیوں سے تیار شدہ چائے بلڈ پریشر کم کرنے میں مفید پائی گئی ہے اور طبی تجربات میں اس کا یہ فائدہ نمایاں ہوا ہے۔ اس کا تجربہ ہائپرٹینشن میں مبتلا 75؍افراد پر کیا گیا تھا۔ اس تجربے کے دوران انہیں بلڈ پریشر کم کرنے والی کوئی اور دوا استعمال نہیں کروائی گئی جبکہ صبح ناشتے سے پہلے اس پھول کی سوکھی پنکھڑیوں کو ابال کر بنائی گئی چائے انہیں روزانہ چار ہفتے تک پلائی گئی۔ چار ہفتے کے بعد جو نتیجہ سامنے آیا، اس کے مطابق ان کا اوپر کا Systolic بلڈ پریشر 11؍فیصد اور نیچے کا Diastolic بلڈ پریشر 12.5؍فیصد تک کم ہوگیا تھا۔ ’’حبس کس‘‘ کے خشک پھول کی چائے سے ان کو اسی طرح کا فائدہ حاصل ہوا تھا جیسا کہ روزانہ بلڈ پریشر کی دوائیں استعمال کرنے والوں کو ہوتا ہے۔ اس چائے کو تیار کرنا بہت آسان ہے۔اس پھول کی ایک گرام وزنی خشک پنکھڑیوں کو کچھ منٹ تک گرم پانی میں ابالیں۔ اس کا ذائقہ ہلکا ترش ہوسکتا ہے۔ اگر آپ چاہیں تو اس میں شہد ملا سکتے ہیں۔ اس کے بعد یہ نیم گرم مشروب دن میں دو بار یا دن میں ایک بار صبح ناشتے سے پہلے پی لیں۔ اگر دن میں دوسری بار یہ چائے پینا چاہیں تو 8 گھنٹے کا وقفہ دیں۔ آپ اس چائے کے علاوہ حبس کس کے پھول سے تیار شدہ دیگر سپلی منٹس بھی استعمال کرسکتے ہیں۔ حبس کس کی چائے سے بلڈ پریشر میں کمی کا فائدہ عموماً دو ہفتے کے استعمال کے بعد سامنے آتا ہے۔ امریکی محکمہ زراعت کے مطابق اس سرخ پھول کی چائے میں قدرتی طور پر کیلوریز کم ہوتی ہیں اور اس میں کیفین بالکل نہیں ہوتی جبکہ کیلشیئم، آئرن، میگنیشئم، فاسفورس، پوٹاشیم، سوڈیم اور زنک جیسے منرلز کی مناسب مقدار ہوتی ہے۔ اس میں نیاسین اور فولیٹ جیسے کچھ وٹامنز بھی ہوتے ہیں جو مجموعی صحت بہتر رکھتے ہیں۔ اس چائے سے اینٹی آکسیڈنٹ Anthocyanins کی وافر مقدار بھی حاصل ہوتی ہے، جو ہائی بلڈ پریشر کو معمول کی سطح پر لانے کے علاوہ نزلہ زکام اور پیشاب کے امراض سے بھی بچاتی ہے۔ جو لوگ اپنا وزن کم کرنا چاہتے ہیں وہ اس چائے سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں کیونکہ اس پھول کا عرق نشاستہ اور گلوکوز کا انجذاب جسم میں کم کردیتا ہے۔ حبس کس خون میں خراب کولیسٹرول کی سطح بھی گھٹا دیتا ہے جس سے امراض قلب اور ذیابیطس سے بھی حفاظت ہوتی ہے۔