تازہ شمارہ
Title Image
December 31, 2018
اینیمیشن سے حقیقت کا سفر لائیو ایکشن فلموں کا نیا دور

اینیمیشن سے حقیقت کا سفر لائیو ایکشن فلموں کا نیا دور

ایک زمانہ تھا جب اینیمیٹڈ فلمیں بچوں کے لیے کسی ٹریٹ سے کم نہیں ہوتی تھیں۔ 80ء اور 90ء کی دہائی میں بننے والی اینیمیٹڈ فلمیں اس دور کے بچوں نے جوان ہو کر اپنے بچوں کو بھی دکھائیں۔ اب زمانہ بالکل تبدیل ہوچکا ہے اور ہولی وڈ فلموں میں ٹیکنالوجی کو بہت زیادہ اہمیت دی جانے لگی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ اینیمیٹڈ فلموں کی بنیاد ڈالنے والے نامور فلم ساز ادارے اب سپر ہٹ پرانی فلموں پر لائیو ایکشن فلمیں بنا رہے ہیں جو دیکھنے میں بالکل حقیقی معلوم ہوتی ہیں۔ لائیو ایکشن فلموں کی کامیابی کی سب سے بڑی وجہ ایڈوانس کمپیوٹر افیکٹس کا کمال استعمال اور فلم کی پرانی مقبول کہانی ہے۔ بچوں کے لیے مختلف و منفرد کارٹون کردار متعارف کروانے والے ڈزنی اسٹوڈیوز نے درجنوں سپر ہٹ اینیمیٹڈ فلمیں بنائی ہیں اور یہی وجہ ہے کہ آج ڈزنی فلمز ہی سب سے زیادہ لائیو ایکشن فلمیں بنا رہا ہے۔ ’’دی جنگل بک‘‘، ’’ایلس اِن دی ونڈر لینڈ‘‘، ’’میلے فیسنٹ‘‘، ’’سنڈریلا‘‘، ’’بیوٹی اینڈ دی بیسٹ‘‘ اور ’’کرسٹوفر رابن‘‘ وہ تمام لائیو ایکشن فلمیں ہیں جنہیں ڈزنی نے شاندار انداز میں پیش کیا اور فلم بینوں سے خوب داد وصول کی۔ آنے والا دور بھی مزید لائیو ایکشن فلموں کا دور ہوگا۔ سال 2019ء میں ڈزنی کی ایک نہیں بلکہ چار لائیو ایکشن فلمیں ریلیز ہونے جارہی ہیں۔ اس تحریر میں ہم قارئین کو ان آنے والی لائیو ایکشن فلموں کے بارے میں بتارہے ہیں جن کا فلم بینوں کو بے چینی سے انتظار ہے۔ فلم’’ڈمبو‘‘ 1941ء میں والٹ ڈزنی پروڈکشنز نے سرکس کے ہاتھی ’’ڈمبو‘‘ کے کردار پر مبنی اینیمیٹڈ فلم بنائی تھی۔ 64منٹ دورانیے کی اس فلم کو بنانے پر ساڑھے نو لاکھ ڈالرز خرچ کئے گئے تھے جبکہ فلم نے 16 لاکھ ڈالرز کا بزنس کیا تھا۔ ٹم برٹن کی ہدایات میں ’’ڈمبو‘‘ کی لائیو ایکشن فلم تکمیل کے آخری مراحل میں ہے۔ فلم کا نیا اسکرپٹ اہرن کروگر نے لکھا ہے جو فلم ’’ٹرانس فارمرز‘‘ کی کہانی بھی تحریر کر چکے ہیں۔ ڈزنی تصدیق کر چکا ہے کہ ’’ڈمبو‘‘ میں کولن فیرل، ایوا گرین، ڈینی ڈی ویٹو اور مائیکل کیٹون مرکزی کردار نبھائیں گے۔ فلم کا آفیشل ٹریلر بھی ریلیز کر دیا گیا ہے جسے فلم بینوں نے پسند بھی کیا ہے۔ اب ’’ڈمبو‘‘ 29 ؍مارچ 2019ء کو سینما گھروں کی زینت بنے گی۔ یہ 2019ء کی پہلی لائیو ایکشن فلم بھی ہوگی۔ فلم ’’الہٰ دین‘‘ الہٰ دین کے چراغ اور اس کے جن کی کہانیاں تقریباً تمام ہی بچے بچپن میں اپنے بڑوں سے سنتے ہیں۔ ہم ان خوش نصیب بچوں میں شامل ہیں کہ جنہوں نے یہ کہانیاں صرف سنی ہی نہیں بلکہ 1992ء میں ’’الہٰ دین‘‘ کی پہلی اینیمیٹڈ فلم بھی دیکھی۔ 90ء کی دہائی کے بچے ’’الہٰ دین‘‘ کے ویڈیو گیم کے دیوانے تھے۔ موجودہ دور کے بچے مزید خوش نصیب ہیں کیوں کہ انہیں بڑے پردے پر ’’الہٰ دین‘‘ کی لائیو ایکشن فلم جلد ہی دیکھنے کو ملے گی۔ ہدایتکار گائے ریچی فلم ’’الہٰ دین‘‘ پر کام کر رہے ہیں جس میں ’’جیسمین‘‘ اور ’’الہٰ دین‘‘ کی رومانوی کہانی کو میوزکل انداز میں پیش کیا جائے گا۔ فلم میں کینیڈین اداکار مینا مسعود ’’الہٰ دین‘‘ کا کردار نبھا رہے ہیں جبکہ اداکارہ ناؤمی اسکاٹ ’’جیسمین‘‘ کے روپ میں نظر آئیں گی۔ گو کہ اس کاسٹ پر تنقید بھی کی گئی ہے کیوں کہ بہت سے فلم بینوں کا خیال تھا کہ ’’الہٰ دین‘‘ کے کرداروں میں اصل کہانی کے مطابق مشرق وسطیٰ سے تعلق رکھنے والے اداکاروں کو کاسٹ کیا جانا چاہیے تھا۔ فلم میں مشہور زمانہ کردار ’’جنی‘‘ یعنی’’جن‘‘ کا کردار وِل اسمتھ ادا کر رہے ہیں۔ فلم کا ٹریلر اکتوبر 2018ء میں ریلیز کیا جاچکا ہے جبکہ فلم کو ’’24 ؍مئی 2019ء کو ریلیز کیا جائے گا۔ فلم’’دی لائن کنگ‘‘  2019ء میں جس لائیو ایکشن فلم کا سب سے زیادہ بے صبری سے انتظار کیا جائے گا وہ ’’دی لائن کنگ‘‘ ہے۔ 1994ء میں ریلیز ہونے والی میوزیکل اینیمیٹڈ فلم’’دی لائن کنگ‘‘ نے دنیا بھر میں تہلکا مچا دیا تھا۔ یہ ڈزنی کی 32ویں اینیمیٹڈ فلم تھی۔ گو کہ ’’دی لائن کنگ‘‘ کو تنقید کا نشانہ بھی بنایا گیا جس کی وجہ یہ تھی کہ فلم کے کرداروں اور کہانی میں جاپانی کارٹون ’’کمبا‘‘ سے مماثلت تھی۔ تاہم اس کے باوجود بھی ’’دی لائن کنگ‘‘ نے بے انتہا مقبولیت حاصل کی۔ فلم نے دو اکیڈمی ایوارڈز اور دو گولڈن گلوب ایوارڈز بھی جیتے تھے۔ 45 لاکھ ڈالرز کے بجٹ سے بننے والی ’’دی لائن کنگ‘‘ نے مجموعی طور پر 96 کروڑ 85 لاکھ ڈالرز کا بزنس کیا تھا۔ اب ’’دی لائن کنگ‘‘ کی لائیو ایکشن فلم کا ٹریلر اپنی پرانی فلم سے زیادہ مقبول ہورہا ہے۔ لائیو ایکشن فلم ’’دی جنگل بک‘‘(2016ء) کی ہدایات دینے والے ہدایتکار جون فاورئیو 2016ء سے ’’دی لائن کنگ‘‘ پر کام کر رہے ہیں۔ فلم میں ’’سمبا‘‘ کے کردار کی آواز ڈونلڈ گلوور بنے ہیں جبکہ ’’اسکار‘‘ کے کردار کی آواز چیوٹل ایجی فور بنے ہیں۔ ’’سمبا‘‘ کی محبت ’’نالا‘‘ کے کردار کو گلوکارہ بیونسے ناولز نے اپنی آواز دی ہے۔ فلم 19؍ جولائی 2019ء کو سینما گھروں میں سجے گی اور امید کی جارہی ہے کہ یہ نئے ریکارڈ قائم کرے گی۔ فلم’’لیڈی اینڈ دی ٹرامپ‘‘ 2019ء میں ڈزنی کی جس چوتھی لائیو ایکشن فلم کی ریلیز متوقع ہے وہ ’’لیڈی اینڈ دی ٹرامپ‘‘ ہے۔ اس فلم کا اعلان مارچ 2018ء میں کیا گیا تھا۔ 1955ء میں بننے والی فلم ’’لیڈی اینڈ دی ٹرامپ‘‘ کا لائیو ایکشن ورژن موسیقی کا تڑکا لے کر آئے گا۔ ہدایتکار چارلی بین نئی فلم تیار کر رہے ہیں جبکہ فلم کی کاسٹ میں کیرسی سیل مونز، تھومس مان، ایڈریان مارٹنز اور آرترو کاسٹرو شامل ہیں۔ جلد ہی ڈزنی اپنی اسٹریمنگ سروس شروع کرنے والا ہے اور اس بات کا قوی امکان ہے کہ ’’لیڈی اینڈ دی ٹرامپ‘‘ کو بھی اس اسٹریمنگ سروس پر ہی پیش کیا جائے گا۔  فلم ’’میولن‘‘ 2016ء میں ڈزنی نے اعلان کیا تھا کہ وہ 1998ء میں ریلیز ہونے والی اینیمیٹڈ فلم ’’میولن‘‘ پر لائیو ایکشن فلم بنائے گا۔ طویل انتظار کے بعد بالآخر ڈزنی فلمز کو ’’میولن‘‘ کے کردار کے لیے چینی اداکارہ لو یفی (Liu Yifei) پسند آئیں۔ میولن کے کردار کے لیے ایک ہزار سے زائد اداکاراؤں کے آڈیشنز لیے گئے تھے۔ اب فلم کی شوٹنگ مکمل ہوچکی ہے اور اس پر کام تیزی سے جاری ہے۔ تاہم فلم کی ریلیز کے حوالے سے فی الحال کوئی تاریخ نہیں بتائی جاسکتی۔ فلم’’میولن‘‘ کی ہدایتکاری نکی کارو دے رہی ہیں جو اس سے قبل 2002ء میں فلم ’’وئیل رائیڈر‘‘ بھی بناچکی ہیں۔  فلم  ’’سنو وائٹ‘‘ 1937ء میں ریلیز ہونے والی مقبول اینیمیٹڈ فلم ’’سنو وائٹ اینڈ دی سیون ڈارفس‘‘ پر بھی لائیو ایکشن فلم بنائے جانے کا کام جاری ہے۔ اطلاعات کے مطابق سپر ہٹ میوزکل فلم ’’لالا لینڈ‘‘ اور فلم ’’دی گرل آن دی ٹرین‘‘ کے گانے لکھنے والے بنج پاسک اور جسٹن پال ’’سنو وائٹ‘‘ کی لائیو ایکشن فلم کے لیے گانے لکھ رہے ہیں۔ تاہم اس فلم کے نام اور دیگر تفصیلات کے بارے میں کوئی اعلان نہیں کیا گیا ہے۔  فلم ’’پینوکیو‘‘ لمبی ناک والے مقبول کردار ’’پینوکیو‘‘ کی اینیمیٹڈ فلم 1940ء میں بنائی گئی تھی۔ اس کردار پر لائیو ایکشن فلم بنانے کا اعلان تقریباً تین برس قبل کیا گیا تھا۔ اب خبر سامنے آئی ہے کہ فلم ’’پڈنگٹن‘‘ کے ہدایتکار پال کنگ کو ’’پینوکیو‘‘ کی لائیو ایکشن فلم بنانے کی ذمہ داری دی گئی ہے۔ اداکار ٹام ہینکس کو بھی فلم میں کاسٹ کئے جانے کے بارے میں خبریں گردش کر رہی ہیں۔ اس فلم کو بھی ڈیجیٹل میڈیم پر ریلیز کرنے کی خبریں سامنے آرہی ہیں۔  فلم’’پیٹر پین‘‘ 1953ء میں ’’پیٹر پین‘‘ کے کردار پر اینیمیٹڈ فلم بنائی گئی تھی۔اب پرواز کرنے والے جانباز پیٹر کی کہانی پر بھی لائیو ایکشن فلم بنائی جارہی ہے۔ اس کے ساتھ ہی ڈزنی ’’ٹِنک‘‘ کے نام سے اینیمیٹڈ فلم ’’ٹنکر بیل‘‘ کے کرداروں پر لائیو ایکشن فلم بنانے کی تیاری کر رہے ہیں۔ خبریں گردش میں ہیں کہ ہو سکتا ہے کہ ’’پیٹر پین‘‘ اور ’’ٹنکر بیل‘‘ کے کرداروں کو ساتھ ملا کر بھی فلم بنائی جائے۔  ڈزنی فلمز جن دیگر لائیو ایکشن فلموں پر کام کررہی ہے، ان میں ’’میلے فیسنٹ ٹو‘‘، ’’کوریلا‘‘ اور ’’لیلو اینڈ اسٹچ‘‘ شامل ہیں۔ فلم ’’میلے فیسنٹ ٹو‘‘ 2014ء میں ریلیز ہونے والی سپر ہٹ فلم ’’میلے فیسنٹ‘‘ کا سیکوئل ہے۔ اس فلم میں اداکارہ اینجلینا جولی نے مرکزی کردار نبھایا تھا اور ایک مرتبہ پھر وہی سینگھ والی حسینہ بن کر سلور اسکرین پر نمودار ہوں گی۔ تاہم اس بار فلم کی ہدایات رابرٹ کی جگہ جوشیم راننگ دے رہے ہیں۔