تازہ شمارہ
Title Image
December 31, 2018
وزن کم کرنے کیلئے کتنی دیر پیدل چلنا ضروری ہے؟

وزن کم کرنے کیلئے کتنی دیر پیدل چلنا ضروری ہے؟

چہل قدمی یا پیدل چلنا بظاہر ورزش کا سب سے موثر اور آسان طریقہ محسوس ہوتا ہے لیکن اگر آپ اپنے پتے ہوشیاری سے کھیلیں تو یہ عام قسم کی چلت پھرت وزن کم کرنے والی مشین میں تبدیل ہو سکتی ہے۔ اگرچہ معمول کے مطابق 10منٹ تک چلنے پھرنے سے یہ مقصد حاصل نہیں ہو سکے گا لیکن اس کے لئے آپ کو گھنٹوں اپنے پائوں پر چلنے کی ضرورت بھی نہیں ہے۔ درست ورزشی طریقوں کی ایک ماہر خاتون نکولیٹ اماریلس کہتی ہیں کہ ’’روزانہ 30 منٹ یا اس سے کچھ زیادہ وقت پیدل چلنا یا کسی اور قسم کی جسمانی سرگرمیوں میں حصہ لینا وزن کم کرنے والی آئیڈیل ورزش ہو سکتی ہے۔ دیگر تمام اقسام کی ورزشوں کی طرح چہل قدمی والی ورزش کے لئے بھی جسم خود کو تیار کر سکتا ہے تاہم اس کے لئے ضروری یہ ہے کہ آپ نہ صرف چہل قدمی کے معمول کے لئے ایک خاص وقت کا تعین کریں بلکہ اس کی شدت بھی طے کریں تاکہ مسلسل اور دیرپا فوائد دیکھنے کو ملیں۔ نکولیٹ کہتی ہیں کہ اگرچہ ہفتے میں کچھ دن چہل قدمی بھی مفید ہوسکتی ہے لیکن بہترین نتائج کے لئے روزانہ پیدل چلنا بہتر ہے، خواہ آپ کو اس کی شدت میں ایڈجسٹمنٹ کی ضرورت پیش آئے۔ ان کا مشورہ ہے کہ ’’اگر آپ کا مقصد وزن کم کرنا ہے تو چلنے کے دوران آپ کی رفتار مسلسل تبدیل ہوتی رہنی چاہئے۔ کسی ایک رفتار کے ساتھ 30سیکنڈ سے ایک منٹ تک چلیں، پھر اسے تبدیل کریں۔ اس سے زیادہ دیر تک ایک ہی رفتار سے نہ چلیں۔ مثال کے طور پر آپ ایسی رفتار سے چل سکتے ہیں کہ30سیکنڈ تک کسی سے بات کر سکیں پھر اس کے بعد اپنی رفتار بڑھا دیں۔ اب ایک منٹ تک آپ کی سانس تیز چلے گی۔ اس کے بعد پھر30سیکنڈ کے لئے رفتار دھیمی کرلیں اور پھر حسب سابق رفتار تیز کرلیں۔ یہی طریقہ پوری ورزش کے دوران اختیار کرنا بہتر رہتا ہے۔ آپ اپنی چہل قدمی میں دیگر مشاغل بھی شامل کر سکتے ہیں۔ مثلاً پیر والے دن آپ پہاڑی پر چڑھنے کا پروگرام بنائیں یا منگل کو تیزرفتاری سے چلنے کا طے کریں، جو کام آپ دل جمعی اور مستقل مزاجی سے کرسکیں، اس پر کاربند رہیں اور ایک اہم بات ہمیشہ یاد رکھیں کہ جب کبھی آپ کا جسم آپ سے یہ کہے کہ آپ بہت جلدی جلدی بہت کچھ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں تو فوراً ڈھیلے پڑ جائیں یا اپنی رفتار سست کر دیں۔