February 04, 2019
ہم کس طرح چلتے ہیں؟

ہم کس طرح چلتے ہیں؟

انسان کے چلنے کا انداز (Human Gait) مختلف ہو سکتا ہے یعنی ہر شخص کی چال الگ الگ انداز کی ہو سکتی ہے لیکن چلنے میں پائوں کی بنیادی حرکت تقریباً ایک جیسی ہی ہوتی ہے۔ (1) چلنے کیلئے پائوں کا پہلا قدم یہ ہوتا ہے کہ وہ زمین یا فرش سے خود کو اوپر اٹھائے۔ اس مقصد کو پانے کیلئے گھٹنے سب سے پہلے اوپر ہوتے ہیںاور پنڈلی کے پٹھے اور وہ پٹھا یا عضلہ جو ایڑی کو پنڈلی کی مچھلی سے ملاتا ہے، جسے ’’دخیلی وتر‘‘ (Achilles tendon)بھی کہتے ہیں اور جو پائوں کے پچھلے حصے میں واقع ہوتا ہے، یہ دونوں چیزیں سکڑتی ہیں جس سے ایڑی کو زمین سے اوپر اٹھنے کا موقع ملتا ہے۔ (2)اس کے بعد جسم کا پورا وزن پائوں پر منتقل ہو جاتا ہے جس کا زمین سے بدستور رابطہ رہتا ہے اور اس حالت میں جسم قدرے آگے جھک جاتا ہے۔ (3) جب جسم کا وزن پائوں پر منتقل ہو جاتا ہے اور انسان اپنا توازن ٹھیک محسوس کرتا ہے تو اس کے بعد پہلے پائوں کا بالائی تلوا زمین سے اوپر اٹھتا ہے جس سے ران بھی کچھ اونچی ہو جاتی ہے۔ (4) اس کے بعد ٹانگ کا نچلا حصہ جسم کے نیچے گھٹنے کے پاس سے جھولتا ہے تاکہ ایک جگہ رکے ہوئے وزن برداشت کرنے والے پائوں کے سامنے خود کو کر سکے۔ (5) عام طور پر ایڑی ہی پائوں کا وہ حصہ ہوتا ہے جو سب سے پہلے قدم زمین پر رکھتے ہوئے لگتا ہے اور جیسے ہی ایڑی زمین سے لگتی ہے جسم کا وزن پائوں کے پچھلے حصے کی جانب منتقل ہونا شروع ہو جاتا ہے۔ (6)یہی عمل دوسرے پائوں کے ساتھ دہرایا جاتا ہے۔ معمول کی چہل قدمی یا دوڑتے ہوئے ایک پائوں اس وقت اٹھنا شروع کرتا ہے جب دوسرا پائوں زمین چھونے کے قریب ہوتا ہے۔