February 11, 2019
وزیر  اعظم  کے لباس میں بھی تبدیلی ’’آچکی ہوئی ‘‘ ہے

وزیر اعظم کے لباس میں بھی تبدیلی ’’آچکی ہوئی ‘‘ ہے

عمران خان، محترمہ بشریٰ مانیکا سے شادی کے بعد سفید کپڑوں میں ملبوس نظر آتے تھے۔ مختلف تقریبات اور بنی گالا میں ملاقاتوں کے موقع پر بھی اُنہیں سفید شلوار قیمص میں ہی دیکھا جاتا تھا اور یہ صورتحال وزیراعظم بننے کے بعد کافی عرصے تک جاری رہی۔ اس حوالے سے ایک عام تاثر یہی تھا کہ عمران خان کی اہلیہ محترمہ بشریٰ مانیکا جو ایک روحانی حوالے سے بھی شہرت رکھتی ہیں، باپردہ رہنے کے ساتھ ساتھ انتہائی سادہ زندگی گزارتی ہیں، جس کی ایک بڑی مثال یہ بھی ہے کہ انہوں نے کبھی اپنے ’’خاتون اوّل‘‘ ہونے کا حوالہ نہیں دیا۔ عمران خان نے سفید لباس اُن کی خواہش پر ہی پہننا شروع کیا تھا، تاہم وزارت عظمیٰ کے تقاضے مختلف ہوتے ہیں، جس کے بعد انہوں نے سفید لباس کو بتدریج ترک کرنا شروع کردیا۔ پاکستان کے دوروں پر آنے والی غیر ملکی شخصیات اور بیرون ملک دوروں پر ملنے والے راہنماؤں سے ملاقاتوں کے دوران وہ موقع کی مناسبت سے لباس زیب تن کرتے ہیں لیکن اب وہ وزیراعظم کی حیثیت سے بنی گالہ میں اپنے ذاتی دوستوں اور تحریک انصاف کے راہنماؤں سے ملاقاتوں کے دوران بھی کلرفل لباس میں نظر آتے ہیں، رنگین اسکارف، مختلف رنگوں کی جیکٹوں اور مختلف رنگوں کے شلوار قمیص میں ملبوس۔ ظاہر ہے کہ یہ اسلام آباد کے سرد موسم کا تقاضا ہے، بہرحال وزیراعظم عمران خان کے لباس میں بھی تبدیلی آگئی ہے۔