تازہ شمارہ
Title Image
March 04, 2019
کرس گیل نے کہا الوداع کرکٹ

کرس گیل نے کہا الوداع کرکٹ

ویسٹ انڈیز کے بلے باز کرس گیل نے ورلڈ کپ 2019ء کے بعد ایک روزہ میچز سے ریٹائرمنٹ کا اعلان کردیا۔ جارح مزاج 39 سالہ بیٹسمین گرس گیل نے ریٹائرمنٹ کے اعلان کے ساتھ یہ بھی کہا ہے کہ وہ فرنچائز کرکٹ اور ٹی20 میچز کے لیے دستیاب ہوں گے۔ کرس گیل کا شمار دنیا کے ان 6 مایہ ناز بلے بازوں میں ہوتا ہے، جنہوں نے ایک روزہ میچز میں ڈبل سنچری اسکور کی۔ 1999ء سے ڈیبیو کرنے والے 39 سالہ کرس گیل نے اب تک 284 میچز کھیلے، جس میں انہوں 23 سنچریز کی مدد سے 10 ہزار رنز بنائے۔ ٹیسٹ کیریئر پر نظر ڈالی جائے تو کرس گیل نے اب تک 103 میچز کھیلے ہیں، جب کہ پارٹ ٹائم آف اسپنر ایک روزہ میچز میں اب تک 165 وکٹیں بھی اپنے نام کرچکے ہیں۔ اپنی ریٹائرمنٹ کے اعلان کے بعد بارباڈوس میں انٹرویو دیتے ہوئے کرس گیل کا کہنا تھا کہ وہ دنیا میں کرکٹ کے عظیم ترین کرکٹر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں ہونا چاہیے کہ وہ اب بھی ’’یونیورس بوس‘‘ ہیں اور یہ اعزاز قبر میں جانے تک انہی کے پاس رہے گا۔ کرس گیل نے کہا کہ وہ اب اسٹینڈز میں بیٹھ کر نوجوان کرکٹرز کو دیکھنا چاہتے ہیں۔ ان کی خواہش ہے کہ کیریئر کا اختتام ورلڈ کپ کی جیت کے ساتھ ہو اور اس کے لیے وہ اپنا پورا زور لگائیں گے۔ واضح رہے کہ انگلش کرکٹ ٹیم ان دنوں بارباڈوس میں موجود ہے، جہاں ویسٹ انڈیز اور انگلینڈ کے مابین پانچ ایک روزہ میچز کی سیریز شروع ہو چکی ہے۔ ریٹائرمنٹ کے اعلان کے فوراً بعد گیل کی جانب سے انسٹاگرام پر ایک تصویر بھی شیئر کی گئی۔ یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ پی ایس ایل کے آغاز سے ہی کرس گیل پاکستان آتے رہے ہیں اور پاکستانی شائقین نے ان کی پسندیدگی کا رجحان بہت زیادہ ہے۔ وہ نہ صرف اپنے جارحانہ کھیل کی وجہ سے پاکستانیوں میں مقبول ہیں بلکہ پاکستان آکر انہوں نے گرائونڈ کے باہر بھی اپنی دلکش ڈانس پرفارمنس کے ذریعے اپنے مداحوں کی تعداد بڑھائی ہے۔ ان کے مداحوں کو خوشی ہے کہ کرس گیل کم از کم ٹی ٹوئنٹی کرکٹ کے ساتھ اپنا ناطہ جوڑے رکھیں گے۔