تازہ شمارہ
Title Image
March 11, 2019
دبئی

دبئی

حاکمِ دبئی شیخ محمد بن راشد المکتوم نے کویت کے 58 ویں قومی دن کے موقع پر صحرا میں کویتی امیر کا دنیا کا سب سے بڑا پورٹریٹ بنا دیا۔ تفصیلات کے مطابق متحدہ عرب امارات کے نائب صدر اور وزیراعظم و حاکم دبئی شیخ محمد بن راشد المکتوم نے کویت کے قومی دن کے حوالے سے کویتی شہریوں کو ہدیہ تبریک و تہنیت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ ’’کویت کے عوام نگینے کی طرح ہماری زمین، ہمارے دل اور ہماری تاریخ سے جڑے ہوئے ہیں۔‘‘ عرب خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ حاکم دبئی شیخ محمد نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر کویت کے قومی دن 25 ؍فروری کے حوالے امیر کویت کے بنائے گئے دنیا کا سب سے بڑے پورٹریٹ کی ویڈیو شیئر کی۔ اماراتی وزیراعظم نے نیک تمناؤں کا اظہار کرتے کویتی عوام اور ریاست کے دائمی استحکام اور ترقی کی دعا کی۔ کویت کے امیر درحقیقت انسانیت کے امیر (شہزادے) ہیں۔ کویت اور امیر کویت خوشحالی اور امن کے سال دیکھتے رہیں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ اماراتی اور کویتی حکام مل کر کام کریں گے تاکہ کامرانی حاصل کریں اور مشترکا طور پر ترقی کی سیڑھیاں چڑھیں۔ اماراتی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ متحدہ عرب امارات کی مٹی پر 1 لاکھ 70 ہزار اسکوائر فٹ کے رقبے پر بنائی کی امیر کویت شیخ صبح ال احمد الجبیر الصبح کی تصویر دنیا کی سب سے بڑی تصویر ہے اور اس تصویر کے ساتھ ’’امیر انسانیت‘‘ بھی تحریر ہے۔ اماراتی میڈیا کا کہنا ہے کہ شیخ صبح کی تصویر دبئی کے قدرا صحرا میں سرخ مٹی سے بنائی گئی ہے جسے تقربیاً 2400 گھنٹوں میں مکمل کیا گیا ہے۔ متحدہ عرب امارات(یو اے ای) کے پہلے خلا باز 25 ؍ستمبر کو انٹرنیشنل اسپیس اسٹیشن کے سفر پر روانہ ہوں گے۔ یو اے ای حکام نے اس بات کا اعلان کرتے ہوئے بتایا کہ فوجی پائلٹ ہزا المنصوری یا انجینئر سلطان النیادی خلیجی ریاستوں کے خصوصی خلائی پروگرام کے تحت خلا میں جانے والے پہلے اماراتی شہری ہوں گے۔ ان دونوں افراد کو 4 ہزار امیدواروں میں سے منتخب کیا گیا ہے۔ دونوں افراد روس کی جانب سے حال ہی میں اسپیس اسٹیشن کی جانب بھیجے جانے والے خلابازوں پر مشتمل راکٹ کی تباہی سے خوفزدہ نہیں اور خلائی سفر کے لیے پر عزم ہیں۔ منتخب ہونے والے ایک متوقع خلا باز المنصوری کا کہنا تھا کہ اس حادثے کے بعد ہم مشن کی تیاری کے حوالے سے زیادہ پُر اعتماد ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ کسی بھی حادثے کی صورت میں راکٹ میں موجود آلات عملے کی حفاظت کو یقینی بنائیں گے جس سے ہمیں مزید اعتماد ملا ہے کہ یہ سسٹم بہترین طریقے سے کام کرے گا۔ واضح رہے کہ گزشتہ برس 11 ؍اکتوبر کو امریکی خلا بازوں نک ہیگ اور روسی خلانورد الیکسی اوچینی کو لے جانے والا راکٹ سویوز ایف جی پرواز بھرتے ہی ایک خراب سینسر کے باعث ناکام ہوگیا تھا، تاہم دونوں افراد بحفاظت اترنے میں کامیاب ہوگئے تھے۔ اس سلسلے میں دوسرے متوقع خلاباز نے کہا کہ حادثے کا شکار ہونے والے راکٹ پر سوار دونوں خلانورد اب دوبارہ خلائی مشن پر جائیں گے۔